We use cookies to provide some features and experiences in QOSHE

More information  .  Close
Aa Aa Aa
- A +

فیصل واؤڈا یا فیصل ’وعدہ‘؟

3 1 0
25.04.2019

فیصل واؤڈا صاحب وفاقی وزیر برائے آبی وسائل ہیں، لیکن ان کے ملازمتوں کی برسات کے عنوان سے مشہور ہونے والے دعوے کے بعد لگتا ہے کہ وہ ’آفاقی وزیرِ خوابی وسائل‘ ہیں۔ انہوں نے نوکریاں برسانے کا جو وعدہ کیا ہے اس کے بعد لوگ انہیں پیار سے ’فیصل وعدہ‘ کہنے لگے ہیں۔ کون نہیں جانتا کہ فیصل واؤڈا نے واشگاف الفاظ میں خوش خبری سُنائی کہ ’پاکستان میں اتنی نوکریاں آنے والی ہیں کہ یہاں لوگ کم پڑجائیں گے۔ پان والا اور ٹھیلے والا بھی کہے گا مجھ سے ٹیکس لے لو۔‘

کوئی کچھ کہے ہمیں تو فیصل واؤڈا صاحب کی بات پر مکمل یقین ہے۔ ان کے اس وعدے کے پس منظر میں دلیل یا امکانات تلاش کرنا کارِ لاحاصل ہے کیونکہ ’آتے ہیں غیب سے یہ مضامیں خیال میں‘۔

کوئی نہیں جانتا ہے اس حکومت کے وزرا کو اپنے اشعار کے لیے مضامین غیب سے ملتے ہیں یا نیب سے۔ آپ دیکھیے گا کہ بقول وزیرِ موصوف کوئی 3 یا 4 ہفتے بعد ’وہ دن کہ جس کا وعدہ ہے‘ آئے گا اور پوری قوم جھوم جھوم کر گا رہی ہوگی ’اللہ اللہ کتنے پیارے دن آگئے‘، کسی کی زبان پر ہوگا ’آئے موسم رنگیلے سہانے جیا نہیں مانے‘۔

یہ گانا وہ گائیں گے جن کا جیا نہیں مان رہا کہ فیصل صاحب سچ کہہ رہے ہیں سچ کے سوا کچھ نہیں کہہ رہے۔ اس دعوے پر ہمارے یقین کی بنیاد پانی پر ہے، ارے بھئی سمندر........

© Dawn News TV