We use cookies to provide some features and experiences in QOSHE

More information  .  Close
Aa Aa Aa
- A +

پارلیمانی ضابطہ اخلاق کے لئے کمیٹی کی تشکیل

2 0 0
01.02.2019

گزشتہ ہفتوں میں قومی اور سندھ اسمبلی کے اراکین نے جس انداز میں ایوانوں میں سرکس لگایا ، الزامات لگائے گئے اور جوابی الزامات عائد کئے گئے جو ماحول پر اثر انداز ہوئے ۔ اس کے بعد ہی قو می اسمبلی کا ماحول پرامن رکھنے کے لئے اسپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر نے نے اپنی سربراہی میں پارلیمانی رہنماؤں پر مشتمل ایک 13 رکنی کمیٹی تشکیل دی ہے۔ اس کمیٹی میں وزیراعظم عمران خان سمیت ، اپوزیشن رہنماء شہباز شریف اور سابق صدر پاکستان آصف علی زرداری بھی رکن مقرر ہوئے ہیں۔

شیخ رشید،طارق بشیر چیمہ،خالد مقبول صدیقی، اختر مینگل،مولانا اسعد محمود، غوث بخش مہر، شاہ زین بگٹی،امیر حیدر خان ہوتی اور خالد مگسی شامل ہیں۔یہ کمیٹی اراکین کے طرز عمل کا جائزہ لے گی اور ایوان کا ماحول بہتر بنانے کیلئے تجاویز بھی دے گی۔

یہ کمیٹی بنیادی طور پر پارلیمانی ضابطہ اخلاق پر توجہ دے گی اور ارکان قومی اسمبلی کے رویوں کا جائزہ لے گی اور سپیکر قومی اسمبلی اور ایوان کی طرف سے ارکان کے رویوں کے حوالے سے بھجوائے گئے معاملات کی چھان بین بھی کر سکے گی۔

کمیٹی کے ضابطوں میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ بے بنیاد ثبوت کے بغیر میڈیا پر آنے والے کسی بھی معاملے یا عدالت میں زیربحث مقدمے پر کوئی کارروائی نہیں کرے گی ۔

کمیٹی تشکیل دیتے وقت اسپیکر قومی اسمبلی نے ن لیگ کے سینئر رہنماوں سے رابطے کر کے اپیل کی کہ ایک دوسرے کی قیادت پر ذاتی حملے نہ کئے جائیں۔ جنہوں نے ایوان کا ماحول خراب کرنے کی ذمہ داری چند وزراء پرڈال دی اور کہاکہ فواد چوہدری ‘شیخ رشید، مراد سعید اور شہریار آفریدی (یہ تمام وفاقی وزراء ہیں )ماحول خراب کرتے ہیں ۔

اگر حکومت چاہتی ہے کہ وزیراعظم کی ذات........

© Daily Pakistan (Urdu)