We use cookies to provide some features and experiences in QOSHE

More information  .  Close
Aa Aa Aa
- A +

کراچی

3 0 0
29.01.2019

کہتے ہیں کہ کراچی پاکستان کی معیشت کی ریڑھ کی ہڈی ہے۔ وجہ یہ ہے کہ کراچی میں پاکستان کی واحد بندرگاہ ہے۔ بیرون ملک جو سامان بھی پانی کے جہازوں کے ذریعہ آتا ہے وہ کراچی میں آتا ہے۔ کراچی سے اس کی ترسیل ملک کے دیگر شہروں میں کی جاتی ہے۔

اس ریڑھ کی ہڈی کو درپیش تکالیف ختم کرنے کے لئے کبھی بھی سنجیدگی سے دیر پا اقدامات نہیں کئے گئے ہیں۔ کراچی کے امن عامہ سمیت بنیادی مسائل کی وجہ سے ہی یہاں سے سینکڑوں صنعتی ادارے پنجاب یا دیگر علاقوں میں منتقل ہوگئے ۔ کراچی کو جس بے ہنگم طریقے سے پھیلا دیا گیا ہے اور ہر طرف عمارتوں کا ایک طرح سے جنگل کھڑا کردیا گیا ہے، اس سے مختلف حیلے بہانے لوگوں نے بے دریغ پیسہ ہی بنایا ہے۔

پیسہ بنانے کے لئے ہر جائز اور ناجائز طریقے پر سب ہی نے عمل کیا ہے۔ ہر عمل کے نتیجے میں کراچی کے مسائل میں اضافہ ہوا ہے۔ اس ضرورت کو کسی حکومت نے محسوس ہی نہیں کیا کہ شہر کی آبادی میں اضافہ کی صورت میں پینے کیلئے پانی چاہئے ہوگا، نکاسی آب کی سہولت چا ہئے ہوگی، آبادی میں اضافہ ہوگا تو انسانوں کی تمام ضرورتوں کو پورا کرنا ہوگا۔ سڑکوں میں اضافہ کرنا ہوگا۔

کھیل کے میدان، پارک، تعلیمی اداروں کی عمارتوں ، اسپتالوں کی عمارتوں کے لئے زمین کی ضرورت پڑے گی ۔ سرکاری دفاتر قائم کرنا ہوں گے، پولس تھانے تعمیر کرنا ہوں گے۔ وغیرہ وغیرہ۔ حکومتوں نے عمارتیں تو تعمیر کرنے کی جائز اور ناجائز اجازتیں دیں ، جن کی بہتات کی وجہ سے کراچی کو سنبھالنا ایک طرح سے عملا ً ناممکن ہو گیا ہے۔

آج کل سپریم کورٹ کے کراچی میں غیر قانونی طریقے سے تعمیر کردہ عمارتوں کو منہدم کرنے کے حالیہ احکامات پر بحث جاری ہے۔ پیپلز پارٹی کی صوبائی........

© Daily Pakistan (Urdu)