We use cookies to provide some features and experiences in QOSHE

More information  .  Close
Aa Aa Aa
- A +

گھونگھٹ دار بنام ’’نِکّے دے ابا‘‘

20 120 0
05.06.2019

از اندرونِ خانہ

بروز عید سعید المعروف چھوٹی عید

ملکِ تضادستان

نِکّے دے ابّا!!

السلام علیکم! آدابِ عاجزانہ۔ خط اس لئے لکھنا پڑ رہا ہے کہ آپ کچھ عرصہ سے بندی سے ناراض ہیں، نہ ملتے ہیں اور نہ بات کرتے ہیں۔ سب اہلِ خانہ پریشان ہیں، اسی پریشانی کے عالم میں بندی یہ خط اخبار کے ذریعے بھیج رہی ہے وگرنہ یہ مکمل طور پر نجی خط ہے، اسے خفیہ سمجھ لیں۔ اس میں کوئی قومی مسئلہ ہے نہ کوئی سیاسی قصہ۔ سیاسی اور غیر متعلقہ افراد اس خط کو پڑھنے سے باز رہیں۔ میں پردہ دار، گھونگھٹ دار اور شرم و حیا رکھنے والی خاتون ہوں، اپنے خاوند کا نام لینا ہماری ریت روایت نہیں ہے اس لئے میں ’’انہیں‘‘ شروع سے ہی ’’نِکّے دے ابا‘‘ کہہ کر بلاتی ہوں۔ اب تھوڑی سی ناراضی ہے مگر اب بھی ان کا احترام، خوف اور دبدبہ اسی طرح قائم ہے۔ ان کا نام آتے ہی بندی سہم سی جاتی ہے، جسم میں جھرجھری سی چھڑ جاتی ہے اور آنکھیں شرم سے جھک جاتی ہیں۔

کچھ عرصہ پہلے بندی نے مہنگائی کا ذکر کیا تو آپ ناراض ہو گئے تھے اور مجھے جھڑک کر کہا تھا اپنے خرچ کم کرو تمہارے خرچے بہت زیادہ ہیں، اس دن سے آپ کی یہ باندی، یہ پیاری اور راج دلاری رعایا خانم رو رو کر اپنا برا حال کر چکی ہے۔ مرچ، ٹماٹر،........

© Daily Jang