We use cookies to provide some features and experiences in QOSHE

More information  .  Close
Aa Aa Aa
- A +

تاریخ کا عدل

33 27 0
02.06.2019

وہ برطانیہ کی ٹاپ یونیورسٹی سے پڑھ کر پاکستان آیا تو اس کا مقصد تاریخ بنانا تھا۔ وہ کچھ کرکے دکھانا چاہتا تھا، اس نے اپنے دامن پر جانب داری اور کرپشن کا کوئی داغ نہ لگنے دیا۔ وہ بہت محنت سے اپنا مقام بناتا گیا، اس کی ساکھ بھی اچھی تھی مگر پھر وہی ہوا جو ہر بڑے آدمی کے ساتھ ہوتا ہے۔ تاریخ امتحان لیتی ہے، دیکھتی ہے کہ آپ اصول پر کھڑے ہیں یا بڑے آدمی ہوکر مصلحت کا شکار ہو گئے ہیں۔ وہ تاریخ کا بڑا شائق ہے اور ہر باضمیر کی طرح تاریخ میں زندہ رہنا چاہتا ہے مگر اب ایک ساتھی کے احتساب کا دبائو آگیا۔ اس کے جانے میں چند ماہ باقی ہیں، تاریخ اس کے عدل کا فیصلہ اس امتحان کی بنیاد پر ہی کرے گی، فریق دو ہیں، ایک ساتھی اور دوسرے طاقتور حلقے اور حکومت۔ تاریخ منتظر ہے کہ تاریخ کا طالب علم کیا فیصلہ کرے گا؟

ساتھی بھی کوئی عام نہیں، وہ ملک بنانے والوں کا فرزند ہے۔ اس کے مخالف بھی اس کی مالی دیانت کی گواہی دیتے ہیں۔ وہ بے خوف ہے بلکہ کچھ زیادہ ہی بے خوف ہے۔ سرعام ایسی باتیں کر جاتا ہے جو طاقتوروں کو نالاں کر دیتی ہیں۔ اس نے ایسے فیصلے لکھے ہیں جس میں مقتدرہ کی سیاسی اور انتظامی مداخلت پر شدید تنقید کی گئی ہے۔ اس کے خلاف ریفرنس میں بھی کرپشن کا الزام نہیں لگایا گیا، بلکہ کہا گیا ہے کہ اس کی اہلیہ کے غیر ملکی اثاثوں کو ظاہر نہیں کیا گیا۔ یوں اس نے ملکی قوانین کے مطابق جرم کیا ہے۔ معاملہ تاریخ کی عدالت میں ہے اور اہم ترین کردار تاریخ کے اس طالب علم کا ہوگا جو تاریخ بنانا چاہتا ہے۔

اور وہ جس نے ریفرنس بنوایا اور بھجوایا، بہت عقلمند ہے، فروغِ عقل پر یقین رکھتا ہے، بادِ........

© Daily Jang