We use cookies to provide some features and experiences in QOSHE

More information  .  Close
Aa Aa Aa
- A +

ٹیکنوکریٹس کا صدارتی تڑکا

7 115 0
22.04.2019

خود ستائشی کی بیماری کے شکار مسیحا، اسی طرح اپنے جانثاروں کی بھینٹ دیا کرتے ہیں، چاہے مملکت بغلیں بجایا کئے۔ ایسا کپتان بھی کسی نے نہ دیکھا ہو گا کہ وہ کھیل کے جاری رائونڈ کے اہم ترین مرحلے پر اپنی آدھی فرنٹ لائن کو دشنام دے کر پویلین بھیج دے۔ کہاں ڈریم ٹیم کے اتنے چرچے تھے اور کہاں اُس کی ’ایسی‘ درگت کہ وہ منہ دکھانے قابل نہ رہے۔ مسیحا ہو یا صدر، ہوتا ایک ہی ہے، باقی سب شاملِ باجہ ہوتے ہیں۔ ملکی مفاد کو نقصان پہنچانے والے اور بُری کارکردگی دکھانے والے پھر بھی شاملِ باجہ رہیں مگر اُن کی توقیر کون کرے گا۔ اسد عمر جیسے طرم خان رسوا ہو کر تیرے کوچے سے نکلے تو ستائش کرنے کے قابل کہاں رہے، اُن کی جگہ ملی بھی تو حفیظ شیخ کو جن کے بارے میں آصف زرداری نے کہا تھا کہ اُنہوں نے حفیظ شیخ کا نام اِس اُمید پر چنا کہ سندھی ہے کم از کم چھائوں میں تو مارے گا۔ اب معلوم نہیں شیخ صاحب خان صاحب کو دھوپ میں مارتے ہیں یا کہیں اور؟ رہی بات ہمارے فواد چوہدری کی تو میڈیا کو خوار اور اپوزیشن کو رسوا کرنے کے بعد اب وہ جانے سائنس و ٹیکنالوجی کے ساتھ کیا کریں گے۔ خیر سے تحریکِ انصاف کے ٹیلنٹ سے بھرے سمندر میں کوئی منتخب شخص ایسا نہ تھا جو آدھی درجن کلیدی اسامیوں کو پُر کر سکتا۔ ایسے میں........

© Daily Jang