We use cookies to provide some features and experiences in QOSHE

More information  .  Close
Aa Aa Aa
- A +

برطانیہ میں چاقو چل گئے

10 3 9
15.03.2019

جی، برطانیہ کی تازہ خبر یہی ہے۔ اس تمدن اور تہذیب کے گہوارے میں آج صورتحال یہ ہے کہ ہر دوسرے تیسرے دن کسی نہ کسی پر چاقو چلنے کی خبر آتی ہے۔ اکثر مارنے والا بھی نو عمر ہوتا ہے اور مرنے والا بھی۔ اوپر سے یہ کہ ان وارداتوں میں ایک نہ ایک فریق سیاہ فام ہوتا ہے۔ یہ معاملہ اتنا سنگین ہوتا جا رہا ہے کہ حکمراں جماعت سخت پریشان ہے۔ مگر اس میں بڑا قصور حکومت کا یوں ہے کہ اس نے بچت اور کفایت شعاری کی جو مہم چلائی ہے اور اخراجات میں کٹوتی کے نام پر ملک میں پولیس کا عملہ کم کرنے کی جو کارروائی کی ہے اس کا نتیجہ سامنے آنے لگا ہے۔ قتل کی بڑھتی ہوئی وارداتوں میں کون کون سے عوامل کام کر رہے ہیں، یہ ایک لمبی بحث ہے لیکن سوچیں تو عجب بات ذہن میں آتی ہے۔ ہماری اس دنیا میں ہزار طرح کی مخلوق آباد ہے۔ آپس میں ایک دوسرے کو ہلاک کرنے کا اتنا چلن کسی میں نہیں جتنا انسان میں ہے۔ یہ اس کی فطرت ہے، جبلّت ہے یا عادت۔ ذرا سوچئے کہ یہ سلسلہ حضرت آدمؑ کے وقت سے چلا آرہا ہے جب دنیا کی کُل آبادی پانچ چھ نفوس سے زیادہ نہ تھی۔ اس کے بعد جب سے تاریخ نے ہوش سنبھالا ہے، سینے میں چاقو اتارے جانے کا سلسلہ ایک روز بھی نہیں رُکا۔ یہ تو خیر جسے آتشیں اسلحہ کہتے ہیں اور جسے ہم تمنچہ کہا کرتے تھے، بہت تازہ بات ہے۔ ہمارے بڑے جب کبھی آپس میں لڑتے تھے اور آمنے سامنے ہوتے تھے تو تیر یا نیزے سے........

© Daily Jang