We use cookies to provide some features and experiences in QOSHE

More information  .  Close
Aa Aa Aa
- A +

مظلوموں کا دن بھی!

4 3 14
08.03.2019

ایک بڑا دلچسپ سوال اٹھ رہا ہے۔ ہر سال مارچ کی آٹھویں تاریخ کو عورتوں کا عالمی دن منایا جاتا ہے۔ سوال یہ ہے کہ جس طرح خواتین کا ایک دن منایا جاتا ہے اُسی طرح مردوں کا دن بھی منایا جانا چاہئے۔ برابری کا مطالبہ کرنے والے تو یہی چاہیں گے، مگر عورتوں کے دن تو بےشمار نعرے لگ سکتے ہیں۔ مثلاً خواتین کو وہی حقوق دئیے جائیں جو مردوں کو حاصل ہیں، عورتوں کو کمتر نہ تصور کیا جائے، اُن کے ساتھ منصفانہ رویہ اختیار کیا جائے اور سب سے بڑھ کر یہ کہ خواتین کو صنفِ نازک کہنا قانوناً ممنوع قرار دیا جائے۔ اب اگر مردوں کا دن بھی منایا جائے اور لوگ نعرے لگاتے ہوئے سڑکوں پر نکلیں تو وہ نعر ے کیا ہوں گے۔ ہمارے ذہن میں ایک دو ہی نعرے آتے ہیں، مثلاً زچگی کی چھٹّی شوہروں کو بھی دی جائے اور یہ کہ مردوں کیلئے روز روز شیو بنانے کی زحمت ختم کی جائے۔ اِس معاملے میں خواتین مزے میں ہیں، منہ دھو کر گھر سے نکل کھڑی ہوتی ہیں۔ اک ذرا سا میک اپ ہی تو کرنا ہوتا ہے، اس پر خواتین کو کوئی اعتراض نہیں۔ ہاں اس پر مرد حضرات کو شکایت ہو سکتی ہے کہ گھر کا خرچ بڑھ جاتا ہے۔ اس سے بھی بڑھ کر یہ کہ اس کمبخت میک اپ کی وجہ سے خواتین دن میں کچھ اور نظر آتی ہیں، شب میں کچھ اور۔ خواتین جس انصاف کا مطالبہ کرتی رہی ہیں وہ تو اب عالمی تحریک بنتا جا رہا ہے۔ ان کی حقوق کی بات ہر جگہ ہونے لگی ہے۔ بی بی سی میں تو ایک ہی منصب پانے والے........

© Daily Jang