We use cookies to provide some features and experiences in QOSHE

More information  .  Close
Aa Aa Aa
- A +

حج سبسڈی:حقیقت کیا ہے

16 71 128
05.02.2019

سرتسلیم خم کہ حج بیت اللہ انفرادی عبادت ہے جو محض صاحبِ استطاعت افراد پر فرض ہے اور اس کی ادائیگی کے لئے پہلے سے معاشی مسائل کا شکار حکومت سے سبسڈی کا تقاضا نہیں کیا جا سکتا مگر تکلف برطرف، یہ کریڈٹ تو آپ کو ہی جاتا ہے کہ لاکھوں عازمین حج جو پرانے پاکستان میں صاحبِ استطاعت افراد کی فہرست میں شامل تھے، آپ کی غلط پالیسیوں نے ان سے استطاعت چھین لی، ویسے معاشی استحصال کرنے والوں نے سبسڈی کے نام پر عوام کوخوب دھوکہ دیا ہے۔ حکومتیں لوگوں کی جیب پر ڈاکہ ڈالتی ہیں، من پسند افراد کو نوازنے کے لئے کرنسی کی شرح تبادلہ میں اچانک ردوبدل کردیا جاتا ہے اور جب کھربوں روپے لوٹ لئے جاتے ہیں تو پھر آٹے، دال اور چینی پر سبسڈی کی خیرات دے کر احسان جتلایا جاتا ہے۔ سبسڈی کی یہ ساہو کاری ہر جگہ کار فرما دکھائی دیتی ہے، مثال کے طور پر ڈیم بنانے کا بوجھ عوام پر ڈالا جاتا ہے، آج بھی بجلی کے بلوں میں نیلم جہلم سرچارج کے نام پر زبردستی ٹیکس لیا جا رہا ہے، پھر جب ہمارے ہی پیسوں سے بجلی تیار ہوتی ہے تو نہ صرف مہنگی بیچی جاتی ہے بلکہ اس میں انواع و اقسام کے ٹیکس بھی شامل کر دیئے جاتے ہیں، یہاں تک کہ جہاں سرکاری اہلکاروں کی ملی بھگت سے بجلی چوری ہوتی ہے یا عملے کی نااہلی کے باعث لائن لاسز کی صورت میں بجلی ضائع ہوتی ہے تواس کا بوجھ بھی صارفین پر ڈال دیا جاتا ہے۔ جب لوگ اس ظلم و ستم پر چیختے، چلاتے ہیں تو ان سے اینٹھی جا رہی رقم سے ہی معمولی سی سبسڈی دیدی........

© Daily Jang