We use cookies to provide some features and experiences in QOSHE

More information  .  Close
Aa Aa Aa
- A +

کرتارپور کا دورہ

4 2 11
02.02.2019

یہ موجودہ حکومت کی خوش قسمتی ہے کہ اس وقت کوئی بھی ذمہ دار شخصیت اسے گرانے کے حق میں نہیں ہے مگر ہمیں یہ مان لینا چاہئے کہ ’’کھلاڑیوں‘‘ کی یہ حکومت بالفعل اناڑی ثابت ہو رہی ہے، عوام میں اس کے خلاف نفرت روز بروز بڑھتی جا رہی ہے۔ اس سے وابستہ امیدیں اگرچہ آدھی ہو چکی ہیں لیکن پھر بھی تیل کی دھار یہ کہتی ہے کہ انہیں مزید مواقع مہیا کیے جائیں۔ جن بھولے بادشاہوں نے ان سے جھوٹی سچی امیدیں باندھ رکھی تھیں انہیں ٹوٹنے کیلئے بہرحال ایک معقول وقت درکار ہے، جو اس حکومت کو ملنا چاہئے۔ البتہ عوامی محرومیوں پر مبنی سیاست و صحافت کا دباؤ تلوار کی صورت ان کے سروں پر منڈلاتا نظر آتا رہنا چاہئے۔ ان کی کوتاہیوں کا پھوٹتا لاوا عوامی نظروں میں آشکار رہنا چاہئے۔دوسرے زاویۂ نگاہ سے ملاحظہ کریں تو جن لوگوں نے یہاں برسوں سے حکمرانی کا سنگھاسن اپنی جاگیر سمجھ رکھا تھا اور جو رعونت اُن میں آ چکی تھی، کیا یہ بہتر نہیں ہے کہ انہیں بھی اپنی تطہیر و درستی کا موقع مل رہا ہے۔ ذرا وہ دن یاد کریں جب عام آدمی کا ان سے رابطہ کرنا دشوار بنا دیا گیا تھا۔ اُن کی چال ڈھال مغل شہزادوں جیسی ہو چکی تھی۔ جو خادم کے لبادے میں مخدوم و خواجہ بنے بیٹھے تھے۔ طاقتوروں کے........

© Daily Jang