We use cookies to provide some features and experiences in QOSHE

More information  .  Close
Aa Aa Aa
- A +

بڑھتی آبادی کا’’ٹائم بم‘‘

11 1 3
26.12.2018

پاکستان کی آبادی میں گزشتہ چند عشروں میں جس تیزی سے اضافہ ہورہا ہے، اُس نے ہر ذی شعور کو حیرت زدہ کردیا ہے۔ مسئلے کی سنگینی کو دیکھتے ہوئے گزشتہ دنوں چیف جسٹس آف پاکستان ثاقب نثار نے اسلام آباد میں ’’بڑھتی ہوئی آبادی پر توجہ‘‘ کے عنوان سے ایک سمپوزیم کا انعقاد کیا جس میں وزیراعظم عمران خان کے علاوہ اعلیٰ عدلیہ کے حاضر اور ریٹائرڈ جج صاحبان، صوبائی وزرائے اعلیٰ، وفاقی وزراء، ایم این ایز، علماء کرام اور دیگر اہم شخصیات نے شرکت کی۔ چیف جسٹس نے سمپوزیم کی اہمیت کے حوالے سے شرکاء کو بتایا کہ 60سال میں آبادی کے کنٹرول پر کوئی توجہ نہیں دی گئی اور تیزی سے بڑھتی ہوئی آبادی نے آج ایک مسئلے کی صورت اختیار کرلی ہے جو کسی بحران سے کم نہیں اور آبادی پر قابو پانے کیلئے فوری اقدامات کرنا ہوں گے۔ وزیراعظم عمران خان نے اپنی تقریر میں اس بات کا اعتراف کیا کہ ہماری فیملی پلاننگ پالیسی مکمل طور پر ناکام ہوچکی ہے، ہمیں آبادی پر قابو پانے کیلئے ہنگامی بنیادوں پر اقدامات کرنا ہوں گے اور تعلیم کے ذریعے بڑھتی آبادی پر قابو پانے کیلئے مہم چلائیں گے اور قانون سازی کی جائے گی۔

اس حقیقت سے کوئی انکار نہیں کرسکتا کہ پاکستان میں تیزی سے بڑھتی ہوئی آبادی مسائل میں اضافے کا سبب بن رہی ہے۔ قیام پاکستان کے وقت ملک کی آبادی 4 کروڑ........

© Daily Jang