We use cookies to provide some features and experiences in QOSHE

More information  .  Close
Aa Aa Aa
- A +

ملک کیوں ناکام ہوتے ہیں؟

10 19 40
08.11.2018

بعض ملک پسماندہ اور بعض ملک خوشحال کیوں ہوتے ہیں؟غربت اور خوشحالی پر اثر انداز ہونے والے عوامل کونسے ہیں؟ہر دور میں معاشی اور سماجی ماہرین نے ان سوالات کا جواب ڈھونڈنے کی کوشش کی۔ مثال کے طور پر 18ویں صدی کے فرانسیسی مفکر Montesquieuنے یہ نظریہ پیش کیا کہ ترقی و خوشحالی کا تعلق جغرافیہ اور آب و ہوا سے ہے۔گرم مرطوب ممالک کے باشندے مزاج کے اعتبار سے سست ،کاہل اور تحقیق و تجسس سے عاری ہوتے ہیں، ایجادات کی طرف مائل نہیں ہوتے ،اس لئے ترقی و خوشحالی کی دوڑ میں پیچھے رہ جاتے ہیں ۔لیکن سنگاپور، ملائیشیا اور بوستانوے نے اس نظریئے کو اٹھا کرتاریخ کے کوڑےدان میں پھینک دیا۔بعد ازاں ماہر معاشیات Jeffry Sachs نے اس نظریئے میں کچھ رد و بدل کیا اور بتایا کہ جغرافیہ اور آب و ہوا کا مزاج پر تو کوئی اثر نہیں ہوتا البتہ اس کے نتیجے میں جو موسمی حالات جنم لیتے ہیں، وہ قوموں کی ترقی و خوشحالی پر اثر انداز ہوتے ہیں۔

مثال کے طور پر ملیریا اور طاعون جیسے وبائی امراض کا تعلق موسمیاتی تبدیلیوں سے ہے۔زمین کاشتکاری کے لئے موزوں نہیں رہتی اور یوں لوگ غربت کی دلدل میں دھنستے چلے جاتے ہیں۔مگر یہ تھیوری بھی بہت جگہوں پر غلط ثابت ہوئی ۔جرمن ماہر سماجیات میکس ویبر کہتا ہے کہ ترقی و خوشحالی کا تعلق معاشرے کی اقدار و روایات اور تہذیب و ثقافت سے ہے۔افریقی ممالک اس لئے غریب ہیں کہ ان کی عادات و اطوار اور اعتقادات فرسودہ وبیہودہ........

© Daily Jang