پاکستان میں ایچ آئی وی مریضوں کی یومیہ تعداد کاایک رپورٹ کے مطابق ایک ہزار تک پہنچ جانا محکمہ صحت کے اداروں کے لیے انتباہ ہے۔ صورت حال کو کنٹرول نہ کیا گیا تو خدشہ ظاہر کیا جارہا ہے کہ یہ مرض بھی ہیپاٹائٹس کی طرح کروڑوں تک پہنچ سکتا ہے۔ صرف وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں محض دس ماہ کے دوران 519 کیس سامنے آئے ہیں جن میں 45 فیصد افراد کی عمریں 25 سال تک ہیں اور اکثریت کی تعداد ہم جنس پرستی کی جانب راغب پائی گئی ہے۔ ان میں زیادہ تر افراد تعلیم یافتہ اور اعلیٰ گھرانوں سے تعلق رکھتے ہیں جبکہ دوسری بڑی تعداد خواجہ سراؤں کی ہے جبکہ ملک کے دوسرے حصوں میں گذشتہ دس ماہ کے دوران سب سے زیادہ کیس پنجاب میں رپورٹ ہوئے ہیں۔ یہ ایک ایسا موذی مرض ہے کہ جو انسانی جسم میں قوت مدافعت کو اس قدر کمزور کر دیتا ہے کہ معمولی بیماریاں بھی خطرناک ثابت ہوتی ہیں اور پاکستان میں اس وجہ سے تقریباً ناقابل علاج ہے کہ اگر ترقی یافتہ اور امیر ملکوں میں معمولی اثر کرنے والی دوائیں موجود ہیں تو یہاں وہ بھی عام دسترس میں نہیں۔ ایڈز کا مرض ایچ آئی وی نامی وائرس سے پھیلتا ہے اور غیر محفوظ جنسی تعلقات اس کا بنیادی سبب بنتے ہیں۔ اس مرض کی علامات کافی دیر بعد واضح ہوتی ہیں اور اس کا دوسری بیماریوں سے فرق کرنا مشکل ہے تاہم خون کا ٹیسٹ ہی اس کی تصدیق کرتا ہے۔ ماہرین صحت پاکستان جیسے کم وسائل رکھنے والے ملکوں میں صحتمند طرز زندگی ہی کو اس کا مؤثر تدارک قرار دیتے ہیں جس کیلئے ضروری ہے کہ متعلقہ ادارے عوامی سطح پر اس سے آگہی مہم کو یقینی بنائیں جو پہلے بھی بڑی حد تک کامیابی سے ہمکنار ہوتی رہی ہے۔ضروری ہوگا کہ اس مقصد کے لیے ایسے ذرائع ابلاغ کا استعمال کیا جائے جن کی عوام تک بڑے پیمانے پر پہنچ ہو۔

اداریہ پر ایس ایم ایس اور واٹس ایپ رائے دیں00923004647998

پنجاب اسمبلی میں قائدِ حزبِ اختلاف حمزہ شہباز نے پارٹی کے ارکان اسمبلی کا اجلاس آج طلب کر لیا، اجلاس میں وزیراعلیٰ پنجاب کے خلاف تحریک عدم اعتماد لانے پر غور کیا جائے گا۔

فٹ بال ورلڈ کپ میں جرمنی اور اسپین کے درمیان میچ دلچسپ مقابلے کے بعد ایک، ایک گول سے برابر ہوگیا، جرمنی کو ناک آؤٹ مرحلے میں پہنچنے کیلئے اگلے مقابلے میں کوسٹاریکا کو ہرانا لازمی ہے۔

انگلش کرکٹ ٹیم پاکستانی سرزمین پر 17 سال بعد ٹیسٹ سیریز کھیلنے کیلئے اسلام آباد پہنچ چکی ہے، ایک روز آرام کے بعد مہمان ٹیم آج سے اپنی کرکٹ سرگرمیوں کا آغاز کردے گی، جبکہ پاکستان کرکٹ ٹیم نے دوسرے روز بھی ٹریننگ کی۔

فیفا ورلڈ کپ 2022 کے گروپ میچ میں کروشیا نے کینیڈا کو 1-4 سے شکست دے دی۔

عمران خان چور دروازے سے اقتدار میں آئے پتلی گلی سے نکل کر بھاگ گئے، فیصل کریم کنڈی

خاتون کے والدین کا کہنا ہے کہ ان کے داماد نے بیٹی کو ہاتھ پاؤں باندھ کر رکھا تھا، ملنے بھی نہیں دیتا تھا تھا۔

وزیر محنت سندھ سعید غنی نے دعویٰ سے کہا ہے کہ چیئرمین تحریک انصاف عمران خان کو جیل میں ڈالا جاتا تو وہ رو پڑتے۔

انڈوپیسیفک حکمت عملی میں تیزی سے ترقی کرتے چالیس ممالک کے خطے کے ساتھ تعلقات گہرے کرنے کے علاوہ سب سے زیادہ توجہ دنیا کی دوسری بڑی معیشت چین پر مرکوز رکھی گئی ہے۔

جے یو آئی رہنما نے کہا کہ پارٹی قیادت سے مشاورت کے بعد اپوزیشن بیٹھ کر فیصلہ کرے گی۔

پنجاب اسٹیڈیم لاہور میں ایونٹ کے آخری روز اولمپئن جیولن تھرور ارشد ندیم سب کی توجہ کا مرکز رہے۔

اسلام آباد سے دفتر خارجہ کا کہنا ہے کہ گجرات مسلم کش فسادات میں بی جے پی قیادت کے براہ راست ملوث ہونے کے بیان پر گہری تشویش ہے۔

سیکرٹری الیکشن کمیشن آزاد کشمیر نے کہا کہ تمام نشستوں کے نتائج ریٹرننگ افسران کی تصدیق کے بعد جاری ہو رہے ہیں۔

حکام کے مطابق عمارتوں کے ملبے کے نیچے سے کچھ اور لاشیں نکالی گئی ہیں، متاثرہ مقامات پر اب بھی امدادی سرگرمیاں جاری ہیں۔

چین میں کورونا کیسز بڑھنے پر کورونا پابندیوں میں اضافے کے خلاف عوام سڑکوں پر نکل آئے، مظاہرین نے کورونا پابندیوں کے خلاف نعرے لگائے اور پابندیاں ختم کرنے کا مطالبہ کیا، پولیس نے کئی مظاہرین کو گرفتار کرلیا۔

شاہد آفریدی نے بھارتی مداحوں سے پسندیدہ کرکٹرز پوچھے، بھارتی مداحوں نے دھونی، ٹنڈولکر، کوہلی کو پسندیدہ کرکٹرز کہا۔

وزیر بلدیات سندھ ناصر حسین شاہ نے پی پی چیئرمین اور وزیر خارجہ بلاول بھٹو زرداری کو ملک کا وزیراعظم بنوانے کے عزم کا اظہار کیا ہے۔

QOSHE - ادارتی نوٹ - ادارتی نوٹ
We use cookies to provide some features and experiences in QOSHE

More information  .  Close
Aa Aa Aa
- A +

ادارتی نوٹ

21 0 1
28.11.2022

پاکستان میں ایچ آئی وی مریضوں کی یومیہ تعداد کاایک رپورٹ کے مطابق ایک ہزار تک پہنچ جانا محکمہ صحت کے اداروں کے لیے انتباہ ہے۔ صورت حال کو کنٹرول نہ کیا گیا تو خدشہ ظاہر کیا جارہا ہے کہ یہ مرض بھی ہیپاٹائٹس کی طرح کروڑوں تک پہنچ سکتا ہے۔ صرف وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں محض دس ماہ کے دوران 519 کیس سامنے آئے ہیں جن میں 45 فیصد افراد کی عمریں 25 سال تک ہیں اور اکثریت کی تعداد ہم جنس پرستی کی جانب راغب پائی گئی ہے۔ ان میں زیادہ تر افراد تعلیم یافتہ اور اعلیٰ گھرانوں سے تعلق رکھتے ہیں جبکہ دوسری بڑی تعداد خواجہ سراؤں کی ہے جبکہ ملک کے دوسرے حصوں میں گذشتہ دس ماہ کے دوران سب سے زیادہ کیس پنجاب میں رپورٹ ہوئے ہیں۔ یہ ایک ایسا موذی مرض ہے کہ جو انسانی جسم میں قوت مدافعت کو اس قدر کمزور کر دیتا ہے کہ معمولی بیماریاں بھی خطرناک ثابت ہوتی ہیں اور پاکستان میں اس وجہ سے تقریباً ناقابل علاج ہے کہ اگر ترقی یافتہ اور امیر ملکوں میں معمولی اثر کرنے والی دوائیں موجود ہیں تو یہاں وہ بھی عام دسترس میں نہیں۔ ایڈز کا مرض ایچ آئی........

© Daily Jang


Get it on Google Play