We use cookies to provide some features and experiences in QOSHE

More information  .  Close
Aa Aa Aa
- A +

اپنی حفاظتی بیلٹ باندھ لیں

8 2 9
11.10.2018

دل پھر طوافِ کوئے ملامت کو جائے ہے

پندار کا صنم کدہ ویراں کئے ہوے

آپ سب کو مبارک ہو۔ پاکستان پھر آئی ایم ایف کا در کھٹکھٹارہا ہے۔ میاں شہباز شریف حراست میں لے لئے گئے۔ آغاز ہفتہ کراچی اسٹاک ایکسچینج بہت نیچے چلی گئی۔ لوگ سمجھے کہ یہ گرفتاری کا ردّ عمل ہے۔ لیکن اسٹاکس کے ایک بڑے بروکر نے کہا کہ نہیں یہ مندی تو حکومت کی آئی ایم ایف جانے نہ جانے کی گومگو کی کیفیت کی وجہ سے ہے۔ اگلے دن جب یہ اعلان آگیا کہ ہم آئی ایم ایف جارہے ہیں تو اسٹاک مارکیٹ اچھلنے لگی۔

پھر جی میں ہے کہ در پہ کسی کے پڑے رہیں

سر زیر بارِ منتِ درباں کئے ہوے

ہم کیسی قوم ہیں کہ قرض لینے اور قرض ملنے پر خوش ہوتے ہیں۔ آتی جاتی حکومتیں یہی خوش کن اعلانات کرتی رہی ہیں۔ مقابلہ ہوتا ہے کہ ہم نے اتنا قرضہ اتنی آسان شرائط پر لے لیا۔ پچھلی حکومت تو یہ نہیں کرسکی تھی۔ پورا نظام ایسا بنادیا گیا ہے کہ قومیں مالیاتی اداروں کی مرضی کے بغیر نہیں چل سکتیں۔ آزادی۔ خود مختاری صرف مفروضے ہیں۔ عالمی بینک، آئی ایم ایف، اقوام متحدہ کے مختلف ادارے یہ طے کرتے ہیں کہ آپ کو زندگی کیسے گزارنی ہے۔ آئی ایم ایف آپ سے کیا مانگے گا۔ پانی کی صحیح قیمت لگائو۔ بجلی کے دام بڑھائو۔ گیس کے نرخوں میں اضافہ کرو۔ اپنے روپے کی اوقات کا تعین کرو۔ مارکیٹ میں ڈالر 133روپے تک پہنچ گیا ہے۔ ماہرین اس کی اصل قدر 150روپے بتارہے ہیں۔ ماہرین معیشت، بینکار، صنعت کار، تاجر سب بڑے آسودہ حال ہیں۔ ڈالر خدانخواستہ 200روپے کا بھی ہوجائے تو انہیں فرق نہیں پڑے گا۔ ان کے........

© Daily Jang