We use cookies to provide some features and experiences in QOSHE

More information  .  Close
Aa Aa Aa
- A +

قصورواقعے کا سبق،ہرزینب کی فکر

2 0 0
14.01.2018

جب سے شہر قصورمیں حیاوعفت سے لبریزننھی پری زینب مسلی اورکچلی گئی ہے تب سے قلب و روح کو کسی کل قرارنہیں ہردردمنداوردل گرفتہ باپ اوربھائی کی طرح میرے بھی دل میں ٹیسیں سی اٹھ رہی ہیں جوں ہی زینب کاپوتروپری چہرہ دل و دماغ کی پردہ سکرین پر نمودارہوتاہے جواس روح فرساواقعے کے بعد سے اب تک ایک تسلسل کے ساتھ چھایاہی ہواہے تو اس کے ساتھ ہی جسم میں سوئیاں سی چبھتی ،چیونٹییاں سی رینگتی اورجان نکلتی محسوس ہوتی ہے۔تب سے اب تک ہرگھرمیں ہردل میں اورہرمحفل میں زینب کے ہی تذکرے ہیں ہرکوئی زینب اوراس کے ساتھ ہونے والی روح فرسابدسلوکی اوردرندگی کو ہی یادکرکرکے خون کے آنسوروتا،کرلاتااورزینب کا نوحہ کرتانظرآتاہے۔آہ:، زینب کے مقدرمیں یہ لکھاتھا،ایسے ہوکے رہناتھا،قدرت کے فیصلوں کو کون ٹال سکتاہے، تقدیرکے سامنے کسی کی کیامجال ہے ؟ملکی ہی نہیں غیرملکی میڈیاپر بھی زینب کے ہی تذکرے ہیں اوربعض غیرمصدقہ اطلاعات کے مطابق ایک عسکری ادارے نے اس شرمناک واقعے میں ملوث درندہ صفت مبینہ ملزم کو گرفتاربھی کر لیا ہے جس کا اعلان وزیر اعلیٰ شہبازشریف کریں گے اورمبینہ ملزم بارے میڈیاکے ہی ایک حصے میں یہ دعویٰ بھی سامنے آیاہے کہ وہ لعین اورانسان نمادرندہ زینب کاہی کوئی رشتے داریاجاننے والاہے تاہم ننھی زینب کے والد نے میڈیاسے گفتگوکے دوران ان اطلاعات کو غلط اوربے بنیادقراردیا ہے کہ اس گھناؤنے واقعے میں ملوث مبینہ ملزم کا ان سے کوئی رشتہ ناطہ یا جان پہچان ہے حالانکہ جب سے زینب بچی کے ساتھ ہونے والے ظلم و بربریت پر مبنی واقعے پرمیڈیامیں تبصرے اوراس کی سی سی ٹی وی فوٹیج پر بحث ہو رہی ہے ایک ہی قیاس اورگمان کیاجارہا تھا کہ زینب جس طرح بے فکری و اطمینان سے اس کے ساتھ چلی جا رہی تھی اس سے دیکھنے والے یہ ہی اندازہ لگاسکتے تھے کہ جیسے وہ کسی اپنے کے ساتھ جا رہی ہو وگرنہ بچے غیرمانوس یا اجنبی شخص کے پاس نہ ایسے پھٹکتے اورنہ ایسے اطمینان سے جاتے ہیں ۔سوچ رہاہوں کیاایساممکن نہیں کہ بچی تو بچی ہے........

© UrduPoint