We use cookies to provide some features and experiences in QOSHE

More information  .  Close
Aa Aa Aa
- A +

سرخیاں اُن کی‘ متن ہمارے

3 0 0
13.07.2018

سرخیاں اُن کی‘ متن ہمارے

عوام کی حاکمیت بحال کر کے رہوں گا: نواز شریف

مستقل نا اہل اور سزا یافتہ سابق وزیراعظم نے کہا ہے کہ ''عوام کی حاکمیت بحال کر کے رہوں گا‘‘ اور عوام کی حاکمیت سے مراد خاکسار کی حاکمیت ہے ‘جس کی اس ناچیز کو یوں سمجھیے کو عادت ہی پڑ گئی ہے اور جس کی ذمہ دار وہ خلائی مخلوق ہے‘ جس نے بار بار مجھے کامیاب کروایا اور اب ہاتھ نہیں پکڑا رہی؛ حالانکہ میں آج بھی ان کی طرف ہی دیکھ رہا ہوں۔ انہوں نے کہا کہ ''مشن کے راستے میں جیل آئے یا پھانسی‘ میرے قدم نہیں رکیں گے‘‘ کیونکہ اللہ کے فضل سے جب سے میں نظریاتی اور انقلابی ہوا ہوں‘ مجھے خود سمجھ نہیں آتی کہ یہ مجھے کیا ہو گیا ہے‘ ہیں جی؟ انہوں نے کہا کہ ''عوام کل گھروں سے نکلیں اور ایئر پورٹ آئیں‘‘ اور تین سو ارب مارکہ لیڈر کا استقبال کر کے ایک سٹال قائم کریں کہ ایک سزا یافتہ مجرم کو کس طرح ہیرو بنایا جا سکتا ہے؛ بشرطیکہ اس روز بارش اور دفعہ 144 سارا کام ہی خراب نہ کردے۔ آپ اگلے روز لندن میں پریس کانفرنس سے خطاب کر رہے تھے۔

6 جولائی کا فیصلہ مسترد‘ عوام اپنا فیصلہ کل سنائیں گے: شہباز شریف

سابق وزیراعلیٰ پنجاب میاں شہباز شریف نے کہا ہے کہ ''6 جولائی کا فیصلہ مسترد‘ عوام اپنا فیصلہ کل سنائیں گے‘‘ اگرچہ میں نے وہ فیصلہ مسترد نہیں کیا ہے‘ کیونکہ میں ایک امن پسند آدمی ہوں اور برخوردار حمزہ کا بھی........

© Roznama Dunya