We use cookies to provide some features and experiences in QOSHE

More information  .  Close
Aa Aa Aa
- A +

اپنے بچے چھپائو، غریبوں کے پٹوائو

2 0 5
friday

اپنے بچے چھپائو، غریبوں کے پٹوائو

شجاعت اور عزیمت کی داستانیں تین طرح کی ہیں۔

پہلی آفاقی۔ یہ تاریخ عرب کے ریگزاروں میں کسی کمان دار نے نہیں اللہ کے آخری رسولؐ کے اہل بیت نے مقدس سر کٹوا کر رقم کی۔ شجاعت کی ایک دیگر داستان آزادیٔ وطن کے نام پر پھانسی چڑھنے والے 27 سالہ نوجوان بھگت سنگھ نے لاہور میں لکھی‘ جبکہ تیسری تاریخ شہید بھٹو کے لہو سے پنڈی جیل کے سیاسی پھانسی گھاٹ پر رقم ہوئی۔

کوئی یہ بتائے کہ مالِ مسروقہ کے صندوقوں کی رکھوالی کے لیے سات سمندر پار اپنے دونوں بیٹے چھوڑ کر مفرور قیدی سزا بھگتنے پر مجبور ہو جائے‘ تو اسے آپ جرأت کہیں گے یا ذلت و رسوائی۔ اس ذلت و رسوائی کا عالمی شو پچھلے ہفتے، عشرے سے ایون فیلڈ اسٹیٹ میں روزانہ کی بنیاد پر جاری ہے۔ ایون فیلڈ اپارٹمنٹس نہیں جاگیر ہے۔ برطانیہ کے قلب‘ سنٹرل لندن میں واقع یہ جاگیر غریب قوم پر ڈکیتی کا جیتا جاگتا ثبوت ہے۔ جب سے شریفوں کی یہ ناجائز جاگیر مجاز پاکستانی عدالت سے بحق سرکار ضبط ہوئی ہے‘ مغرب میں قیام پذیر تارکینِ وطن جاگ اُٹھے ہیں۔ انہی میں سے پاکستان کی 2 بیٹیوں کی کہانی نے جنم لیا۔ 2 عورتیں 2 کردار۔

ایک وہ ہے جو چوری کے مال پر ناز کرتی ہے اور لُٹ دے مال پر نت نئے سے نئے برانڈ کی نمائش بھی۔ سچ تو یہ ہے اس خاتون کی لندن میں تو کیا پاکستان میں بھی کوئی پراپرٹی نہیں ہے۔ اس کے دونوں بھائی شیر کے اصلی بچے ہیں۔ نہ ڈرنے والے نہ جھکنے والے نہ بکنے والے۔ خالص تے اصلی وڈے برطانوی شہری۔ اسی طرح شیر کے ان دونوں بچوں کے بچے بھی 100 فیصد انگلستانی شیر ہیں۔ ساتھ اس کے بچے بھی جو بڑے فخر سے اپنے آپ کو کپتان کہتا ہے۔ اتنے سارے شیر ایون فیلڈ کرپشن محل میں اکٹھے لُک چُھپ کر بیٹھے ہیں کہ مے فیئر کا علاقہ شیر گڑھ میں تبدیل ہو چکا ہے۔ آج کل پاکستانی تارکینِ وطن نے انگلینڈ جیسے آزاد ملک........

© Roznama Dunya