We use cookies to provide some features and experiences in QOSHE

More information  .  Close
Aa Aa Aa
- A +

گاڑیوں کے اتوار بازار شہر سے باہر لیجائیں!

7 3 0
12.02.2019

گاڑیوں کے اتوار بازار شہر سے باہر لیجائیں!

سمن آباد جس کا شمار کبھی لاہور کی پرسکون اور صاف ستھری آبادی میں ہوتا تھا‘ اب غیر ضروری کمرشلائزیشن اور ٹریفک کے ہیجان کے باعث علاقہ غیر میں تبدیل ہو چکا ہے اور اس کی بنیادی وجہ استعمال شدہ گاڑیوں کی خریدو فروخت کرنے والے وہ کار ڈیلر ہیں جنہوں نے سمن آباد موڑ سے لے کر سمن آباد گول چکر تک مین روڈ پر موجود رہائشی عمارتوں کو پرانی گاڑیوں کے کھنڈروں اور جنجال پورہ میں تبدیل کر دیا ہے ۔ خداکی پناہ ہے سینکڑوں کی تعداد میں گھرگاڑیوں کے شو رومو ں میں تبدیل ہو چکے ہیں اور جن لوگوں کی مین روڈ پر کوٹھیاں تھیں ان کی زندگی مکمل عذاب بنا دی گئی ہے۔ شہریوں کوپورے ہفتے کے بعد اتوار کا ایک دن چھٹی اور سکون کے لئے ملتا ہے لیکن اس روز سمن آباد کی مین روڈنو گوایریا بن جاتی ہے اور وہ اپنے گھروں میں محصور ہو نے پر مجبور ہوتے ہیں۔ باوجود اس کے کہ وہاں ٹریفک وارڈنز کی بڑی تعداد موجود ہوتی ہے ‘لیکن وارڈن وہاں کیا کریں گے کہ جب تاجر اپنے شو روموں کے سامنے موجود بیس فٹ کی سروس روڈ پر بھی اپنی گاڑیاں لگا لیں گے جہاں سے لوگوں کے لئے پیدل گزرنا بھی محال ہو جاتا ہے۔ بہت سے لوگ اسی بے ہنگم زندگی کے باعث اپنے گھر اونے پونے داموں بیچنے پر مجبور ہو چکے ہیں ۔یہ بھی تاجروں کی ایک چال تھی جس کے باعث وہ ایک کے بعد دوسرا اور پھر تیسرا گھر خریدتے چلے گئے۔سمن آباد موڑ سے اورنج ٹرین کا ٹریک گزر رہا ہے اور گلشن راوی اور ملتان روڈ سے ٹریفک کا ایک بڑا حصہ اقبال ٹائون جانے کے لئے سمن آباد سے گزرتا ہے لیکن گاڑیوں کے جنجال کے باعث منٹوں کا سفر گھنٹوں میں طے ہوتا ہے۔ اتوار کے روز بھی درجنوں وارڈنز یہاں تعینات کرنا پڑتے ہیں لیکن صورتحال قابو میں نہیں آتی۔

سمن آباد کی موجودہ حالت کو دیکھ کر یہاں گزرا ہوا بچپن اور وہ پندرہ سولہ برس یاد آتے ہیں جب یہاں ہر جانب سکون کا بسیرا تھا ‘........

© Roznama Dunya