We use cookies to provide some features and experiences in QOSHE

More information  .  Close
Aa Aa Aa
- A +

جنسی بے راہ روی کا خاتمہ

6 0 2
14.01.2018

جنسی بے راہ روی کا خاتمہ

گزشتہ چند روز سے ملک کے الیکٹرانک، پرنٹ اور سوشل میڈیا پر قصور میں سات سالہ بچی کے ساتھ ہونی والی زیادتی‘ اور بعد میں اس معصوم بچی کو قتل کرکے کوڑے کے ڈھیر پر پھینک دینے والے المناک واقعہ پر بہت زیادہ گفتگو کی جا رہی ہے۔ یقینا سات سالہ بچی کے بہیمانہ قتل کا یہ واقعہ ہر اعتبار سے انتہائی افسوس ناک ہے اور اس واقعے نے پورے ملک میں بسنے والے ہر حساس شہری کے دل پر انتہائی گہرے اثرات مرتب کئے ہیں۔ بہت سے لوگ اس واقعے کے سبب شدید ذہنی اور عصابی تناؤ کا شکار ہو چکے ہیں اور بچوں اور قوم کے مستقبل کے حوالے سے انتہائی زیادہ تشویش پائی جا رہی ہے۔ گو یہ واقعہ انتہائی المناک اور افسوسناک ہے لیکن یہ اپنی طرز کا پہلا واقعہ نہیں بلکہ ملک میں آئے روز اس طرح کے واقعات رونما ہوتے رہتے ہیں۔ فقط ضلع قصور ہی میں کسی معصوم بچی کو بداخلاقی کے بعد قتل کرنے کا یہ بارہواں (12) واقعہ تھا۔ اس سے قبل قصور ہی کے علاقے حسین خاں والا میں بڑی تعداد میں کم سن بچوں کے ساتھ برائی کا ارتکاب کرکے ان کی غیر اخلاقی ویڈیوز کو بیرون ملک فروخت کیا گیا۔ جب اس طرح کا کوئی واقعہ رونما ہوتا ہے تو حکمران طبقے سے وا بستہ نمایاں افراد اور وزراء چند گھنٹوں کے اندر مجرموں کو پکڑ کر قرار واقعی سزا دینے کا اعلان کرتے ہیں، لیکن یہ بہت بڑا المیہ ہے کہ گزشتہ کئی سالوں کے دوران کسی بھی مجرم کو کیفر کردار تک نہیں پہنچایا جا سکا۔ جرم و سزا کے اس کمزور نظام اور معاشرے کی بگڑتی ہوئی اخلاقی قدروں نے بہت سے اہم سوالا ت کو جنم دیا ہے اور لوگ اس بات کو سوچنے پر مجبور ہو گئے ہیں کہ معاشرے کی گرتی ہوئی اخلاقی صورتحال اور معاشرے میں پائی جانے والی فحاشی اور بے حیائی پر کیونکر قابو پایا جا سکتا ہے۔ اس سلگتے ہوئے حساس ترین موضوع پر کہ ہم معاشرے میں فحاشی اور عریانی کے خاتمے میں کیسے کامیاب ہو سکتے ہیں۔ میں کتاب وسنت کی روشنی میں چند اہم باتوں کو مقتدر طبقات اور عوام کے سامنے رکھنا چاہتا ہوں۔ اگر خلوصِ نیت کے ساتھ قرآن و سنت کی تعلیمات کی بنیاد پر پیش کیے جانے والے ان اہم........

© Roznama Dunya