We use cookies to provide some features and experiences in QOSHE

More information  .  Close
Aa Aa Aa
- A +

جنسی زیادتی کے بڑھتے واقعات اور معاشرتی بے حسی

2 0 33
07.08.2018

میں اپنے علاقے میں رپورٹ ہونے والے ایک جنسی زیادتی کے واقعہ کی چھان بین کر رہا ہوں۔ جس لڑکی سے مبینہ زیادتی ہوئی ہے اس کی عمر اسی مہینے چودہ سال ہوئی ہے، لیکن وہ دماغی اور جسمانی خدوخال سے گیارہ سال کی لگتی ہے اور پوری طرح نارمل نہیں ہے۔ اس بچی کا باپ معذور ہے، بچی کی والدہ بھی پوری طرح صحت مند نہیں ہے۔

بیان کے مطابق اس بچی کو اپنے ہی محلے کے ایک متمول اور طاقتور کنبے کا لڑکا بے ہوش کر کے اٹھا کر اپنے گھر لے گیا( گھر خالی پڑا ہوا ہے) اور رات بھر لڑکی سے زیادتی کرتا رہا اور صبح لڑکی کو بے ہوشی کے عالم میں چھوڑ کر اپنے دوسرے گھر (جہاں لڑکا اپنے خاندان کے ساتھ رہائش پذیر ہے) چلا گیا اور جب لڑکی کو دن گیارہ بجے کے قریب ہوش آئی تو اس نے دیکھا اس کی قمیض ساتھ بیڈ پر پڑی تھی اور قمیض دونوں اطراف سے پھٹی ہوئی تھی۔

لڑکی نے قمیض پہنی اور لڑ کھڑاتی ہوئی اپنے گھر پہنچی۔ لڑکی کے دادا پہلے ہی متعلقہ تھانے میں بچی کی گمشدگی کی رپورٹ درج کروا چکے تھے۔ لڑکی کے گھر پہنچنے اور اپنی روداد ظلم سنانے کے بعد لڑکی کے دادا لڑکے والوں کے گھر گئے اور دروازہ کھٹکھٹایا تو اندر سے وہی لڑکا باہر نکلا اور ان سے الجھنے لگا اور الجھتے ہوئے لڑکی کے دادا کے ساتھ ان کے گھر تک چلا گیا ،جہاں انہوں نے لڑکے کو کمرے میں بند کیا اور پولیس کو اطلاع دی۔

پولیس موقع پر پہنچی اور لڑکے کو گرفتار کر کے لے گئی۔ اب اس کیس کو مختلف رنگ دینے کی کوششیں ہو رہی ہیں اور حسب معمول ارد گرد کے لوگ بے حسی اور بے بسی کی تصویر بنے خاموش تماشائی بنے ہوئے ہیں۔

میں نے جب یہ خبر سوشل میڈیا کے ذریعے سنی تو اس وقت لاہور میں تھا، اگلی صبح میں........

© Daily Pakistan (Urdu)