We use cookies to provide some features and experiences in QOSHE

More information  .  Close
Aa Aa Aa
- A +

کچھ آج اور کل کے شاعروں کے بارے میں

6 2 9
04.11.2017

میں نے محسوس کیا ہے کہ ہمارے شاعروں ، ادیبوں میں سے کچھ لوگ ایسے بھی ہیں جنہیں اپنے ملکی حالات یا بین الاقوامی صورتحال میں ہونے والی تبدیلیوں سے کوئی دلچسپی نہیں ہوتی اگروہ شاعر ہیں تو انہیںمحض یہ فکر لاحق ہوتی ہے کہ کسی نہ کسی طرح ان کی شہرت میں اضافہ ہو اور انہیں ملک الشعراء کے منصب پر فائز کردیا جائے۔ ان میں سے تین چار کوتو میں ذاتی طور پر بھی جانتا ہوں۔ انہیں اگر یہ کہاجائے کہ تم اگر تتے توے پر بیٹھ جائو تو تمہاری بلے بلے ہوجائے گی اور تمہارے ہم عصروں کا جل بھن کر براحال ہو جائے گا تو میرا خیال ہے وہ اپنے ہم عصروں کو جلانے کے لئے اپنی وہ جگہ تتے توے پررکھ دیں گے جس کے جلنے کی بو تو ان کے ہم عصروں تک ضرور پہنچے گی خواہ وہ خود جلیں یا نہ جلیں۔ یہ لوگ نام و نمو اور شہرت کے حصول کے ضمن میں ؎
بدنام اگر ہوں گے تو کیا نام نہ ہوگا
کے اصول کے قائل ہیں۔ ان میں سے ایک صاحب جو واقعی اچھے خاصے شاعر تھے اور ایک زمانے میں مقبول بھی تھے مگر وہ اس مقبولیت سے مطمئن نہ تھے چنانچہ انہوں نے ایک ٹی وی شو میں بھانڈکے طور پر کام کرنا شروع کردیا جس........

© Daily Jang