We use cookies to provide some features and experiences in QOSHE

More information  .  Close
Aa Aa Aa
- A +

2018 کا الیکشن اور مستقبل کا سیاسی لائحہ عمل

2 0 1
12.07.2018

2018کے الیکشن نے بہت سارے سوالات پیدا کر دیئے ہیں۔ سب سے اہم اور پہلا سوال تو الیکشن کی شفافیت پر ہے۔ آج پاکستانی حکمران طبقے ایک خاص قسم کا سیاسی نظام زبردستی مسلط کرنے کی کوشش کر رہے ہیں جس نے میڈیا کی آزادی کو مکمل طور پر سلب کر دیا ہے۔ ایک معروف اخبار نے اپنے اداریے میں حالیہ میڈیا پابندیوں کو مارشل لا دور سے بھی زیادہ سخت گردانا ہے۔ مبصرین کا خیال ہے کہ 2018ء کے الیکشن کے نتیجے میں آنے والی حکومت کی جڑیں زمین کی بجائے خلا میں پیوست ہوں گی۔
پاکستان کی ستر سالہ تاریخ اس بات کی گواہ ہے کہ پاکستان کو ایک آئینی اور وفاقی ریاست کے بجائے وحدانی طریقوں سے چلایا جاتا رہا ہے جس کے نتیجے میں ریاست اور اس کے عوام نے بے شمار اور ناقابل برداشت نقصانات اٹھائے ہیں۔ اٹھارہویں ترمیم کے نتیجے میں غیر معمولی مرکزیت پسندی کا حامل وفاقی نظام عدم مرکزیت کی طرف بڑھ رہا تھا اور ایک نیا سوشل معاہدہ جس کے تحت وحدتیں باہمی رضامندی سے وفاقی تشکیلِ نو کرسکتیں جو جمہوریت اور انسانی حقوق کی بنیاد پر عورتوں اور اقلیتوں کی برابری اور طبقاتی تفریق کو ختم کرنے کی یا کم کرنے کی بنیاد بنتا۔ لیکن پچھلے کچھ عرصے سے اس عمل کو ناسمجھ میں آنے والی وجوہات کی بنا پر روک دیا گیا۔ راتوں رات بلوچستان کی حکومت پر من پسند لوگوں کو بٹھا........

© Daily Jang