We use cookies to provide some features and experiences in QOSHE

More information  .  Close
Aa Aa Aa
- A +

مخصوص کوٹہ برائے مخصوص خواتین

5 0 6
14.06.2018

پروفیسر ڈاکٹرحسن عسکری رضوی صاحب کا بطور وزیر اعلیٰ پنجاب انتخاب عجیب اور غیر معمولی بات تو ہے کہ یہاں اکثر عبوری اور نگراں مدت کے لئے وزرائے اعظم اور دیگر اعلیٰ عہدوں کے لئے شخصیات درآمد کرنے کی روایت ہے۔ اپنے اردگرد بسنے والے ہیروں کو ہم کم کم اہمیت دیتے ہیں۔ ہماری توجہ ان بھاری بھرکم شخصیات کی طرف ڈولتی رہتی ہے جن کے ناموں کے ساتھ سینکڑوں مربعوں، کارخانوں اور ملکوں ملکوں اثاثوں کا ذکر جڑا ہو۔ پہلی بار ایسا ہوا ہے کہ ایک ایسے فرد کو نگراں وزیر اعلیٰ کی خدمات سونپی گئی ہیں جن کی پوری زندگی ایک کھلی کتاب ہے۔ ان کی قابلیت اور اہلیت کے خانے میں دانش، سچائی اور کمٹمنٹ کے حروف کندہ ہیں۔ وہ اصولوں اور ضابطوں کی پیروی کرنے والے انسان ہیں ۔ وہ چاہئے سیاسی حوالے سے خاص نظریہ رکھتے ہوں مگر عملی طور پر اپنے فرائض کی ادائیگی کے دوران کسی کے حق اور کسی کے خلاف جانا ان کے بس میں نہیں ہو گا۔ وجہ یہ ہے کہ تمام عمر دیانت اور شفافیت کے رستے پر چلنے والوں کا من ایسے نظام میں ڈھل چکا ہوتا ہے جہاں راہِ راست سے ہٹنا ممکن ہی نہیں ہوتا۔ تاہم بڑے عرصے سے گورنر ہائوس کی راہداریاں کسی اہل علم و ادب کو خوش آمدید کہنے کے لئے منتظر ہیں۔ چلیں وزیر اعلیٰ ہائوس میں تو دانش کچھ ماہ قیام پذیر رہے گی اور یقینا اس کا مثبت اثر نہ صرف

آئندہ انتخابات میں نظر آئے گا بلکہ پاکستان کی سیاسی صورت حال میں بھی دکھائی دے گا۔ کچھ لوگ ہمیشہ اس بات پر زور دیتے ہیں کہ پڑھنے لکھنے والے، دانش مند قسم کے لوگ اس طرح کے انتظامی عہدوں کے لئے موزوں نہیں ہوتے بلکہ خود اسی طبقے کے لوگ بھی انہیں اس سے دور رہنے کی تلقین کرتے ہیں جس کی وجہ سے سیاست میں........

© Daily Jang