We use cookies to provide some features and experiences in QOSHE

More information  .  Close
Aa Aa Aa
- A +

سرکاری ملازمت سے ریٹائرمنٹ کے بعد؟

13 0 112
14.06.2018

چیف جسٹس جناب ثاقب نثار کے حوالے سے ایک اچھی خبر سامنے آئی ہے جس کے مطابق ان کا کہنا ہے کہ ریٹائرمنٹ کے بعد وہ کوئی نوکری نہیں کریں گے۔ یہ وہ بات ہے جو ایک عرصے سے میرے دل میں تھی۔ کاش! عدلیہ کے تمام جج صاحبان یہ طے کرلیں کہ ریٹائرمنٹ کے بعد وہ کوئی ملازمت سرکاری یا غیر سرکاری قبول نہیں کریں گے۔ صرف عدلیہ نہیں بلکہ یہ ا علان دفاعی اداروںکے سربراہوں کی طرف سے بھی سامنے آنا چاہئے، اسی طرح ہمارے سفیروں اور فارن افیئر کے سربراہان کا بھی یہ اخلاقی فرض ہے کہ ریٹائرمنٹ کے بعد وہ کوئی ملازمت نہ کریں۔پولیس کے سربراہان کو بھی یہ عہد کرنا چاہئے جس کا ذکر ان سطور میں آیا ہے۔ اسی طرح پاکستان کے دوسرے حساس معلومات رکھنے والے جتنے بھی ادارے ہیں ان کا بھی فرض بنتا ہے کہ وہ یہ عہد کریں کہ ریٹائرمنٹ کے بعد کوئی عہدہ قبول نہیں کریں گے۔
یہ بات میں اس لئے کہہ رہا ہوں کہ اتنے اہم اور قابل احترام پوزیشن رکھنے والے افراد کو اپنے دور ملازمت کی عزت پر اکتفا کرنا چاہئے اور دوسرے اس لئے بھی کہ جن پوزیشنوں پر وہ رہے ہیں، ان محترم شخصیات کو ملازمت دینے والا کوئی ادارہ اپنے اس’’احسان‘‘ کی قیمت کسی نہ کسی حوالے سے وصول کرنے کی کوشش کرسکتا ہے۔ اس سے بھی زیادہ اہم یہ کہ ریٹائرمنٹ کے بعد کسی اور عہدے کی خواہش رکھنے والے دوران

........

© Daily Jang